You are here:    Home      Urdu News      پاکستان میں ٹیکسٹائل سیکٹر زبوں حالی کاشکار ہے

پاکستان میں ٹیکسٹائل سیکٹر زبوں حالی کاشکار ہے

January 1, 2018
Published in Urdu News
Comments are off for this post.

لاہور:امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے کہاہے کہ حکمرانوں کی عاقبت نااندیش پالیسیوں کی بدولت ٹیکسٹائل سیکٹرزبوں حالی کا شکار ہے۔2017میں صرف ایک سال کے دوران 50ہزار سے زائد پاور لومزفیکٹریاں بند ہونااور ملکی برآمدات میں7ارب ڈالر سے زائد کی کمی اس بات کاثبوت ہے کہ حکومتی ترجمان سب اچھا کی نوید سناکر قوم کو مسلسل دھوکہ دیتے چلے آرہے ہیں جبکہ اصل صورتحال اس کے برعکس ہے۔فیکٹریاں اور کارخانے بند ہونے سے لاکھوں ہنرمندافراد بے روزگارہوچکے ہیں۔لاگت میں بے پناہ اضافے کے باعث انٹرنیشنل مارکیٹ میں پاکستانی مصنوعات کی ڈیمانڈ کم ہوچکی ہے جبکہ ان کی جگہ بھارت،بنگلہ دیش،چین اورملائیشیاکی صنعتیں لے چکی ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزلاہور میں عوامی وفود سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ مہنگائی کے باعث عوام کی زندگی دوبھرہوگئی ہے۔ رہی سہی کسربے روزگاری نے پوری کردی ہے۔عوام کو ان کی جائزکمائی کاصلہ ملناتودور رشوت خوری اور اقرباپروری کے کلچرنے مزدورسے دووقت کی باعزت روٹی تک چھین لی ہے۔مزدوروں کے گھروں میں نوبت فاقہ کشی اور اس سے بھی بڑھ کر خود کشی تک پہنچ گئی ہے۔انہوں نے کہاکہ سابق وزیر اعظم نوازشریف نے ٹیکسٹائل سیکٹرکو180ارب روپے ریلیف پیکیج دینے کااعلان کیاتھا مگر عمل درآمد آج تک نہیں ہوسکا۔موجودہ حکومت کے پاس ملک میں تیزی سے بڑھتی ہوئی بے روزگاری کے خاتمے کے لیے کوئی وژن نہیں۔جب تک ٹیکسٹائل سیکٹر پرتوجہ نہیں دی جائے گی ملک وقوم ترقی نہیں کرسکتے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں ایک وسیع وعریض رقبے پر کپاس کاشت کی جاتی ہے مگر ٹیکسوں کی بھرمار،بجلی وگیس کے ٹرف میں اضافے اور پنجاب حکومت کی اس حوالے سے بے حسی نے کاشتکاروں سے لے کر صنعت کاروں تک کوپریشان کرکے رکھ دیا ہے۔میاں مقصوداحمد نے مزیدکہاکہ حکمرانوں نے اپنے ساڈھے چار برسوں میں کسی شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کے لیے کچھ نہیں کیا۔لوگوں اپنے جائزمطالبات کے حصول کے لیے احتجاج کی راہ اختیار کرنی پڑتی ہے۔ 

Comments are closed.

Our Mission

Jamaat views regarding the three terms ‘Al-Deen’, Divine Order’, and ‘Islamic Way of Life’ as synonyms.

Our mission of ‘Establishment of Deen’ does not mean establishing some part of it, rather establishing it in its entirety, in individual and collective life, and whether it pertains to prayers or fasting, haj or zakat, socio-economic or political issues of the life.

It is incumbent upon a believer to strive for establishing Islam in its entirety without discretion and division, and believer’s real objective is to attain Allah’s pleasure and success in the this world and hereafter, this cannot be realized without trying to establish Allah’s Deen in this world.

Contact Information

Head Office, Jamaat E Islami Punjab
Mansoora, Multan Road Lahore.

Email: info@punjabjamaat.org.pk

Phone: +92 42 35252177, +92 42 35437990-1

Fax: +92 42 35427685




Facebook   |   Twitter   |   Google Plus

Our Location