You are here:    Home      Urdu News      گزشتہ حکومت کی بھارت نوازپالیسی نے کل بھوشن کیس کوکمزور کیا ہے

گزشتہ حکومت کی بھارت نوازپالیسی نے کل بھوشن کیس کوکمزور کیا ہے

July 19, 2018
Published in Urdu News
Comments are off for this post.

لاہور:متحدہ مجلس عمل پنجاب کے صدر اور امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے کہاہے کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف او آئی سی کا تحقیقاتی کمیشن مقبوضہ کشمیر میں بھجوانے کا اعلان خوش آئند ہے۔بھارت نے ہمیشہ مقبوضہ کشمیر کے پائیدار حل اور جامع مذاکرات سے فرار کی راہ اختیار کی ہے اور اس اہم مسئلے کو حل کرنے سے گریز کیا ہے۔قابض بھارتی فوج مقبوضہ وادی میں مظالم کی انتہاکرچکی ہے۔قتل وغارت گری کے واقعات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جبکہ اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری خاموش تماشائی بنی بیٹھی ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں عوامی وفود سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ کل بھوشن کیس کے حوالے سے حکومت پاکستان کی جانب سے عالمی عدالت انصاف میں جواب جمع کروادیاگیا ہے۔400سے زائد صفحات پر مشتمل جواب اٹارنی جنرل کی سربراہی میں قانونی وخارجی امور کے ماہرین نے تیارکیا ہے۔مسلم لیگ(ن)کی حکومت نے اس اہم مسئلے کوسنجیدگی سے نہیں لیا جس انداز میں اسے لیاجاناچاہئے تھا۔ماضی کے حکمرانوں کی بھارت نوازپالیسی نے کل بھوشن کیس کوکمزور کیا ہے۔کل بھوشن را کاحاضر سروس افسر ہے جس نے بلوچستان میں مداخلت کا اعتراف کیا تھا۔را کے جاسوس کے ساتھ نرمی برتنے کا رویہ تشویش ناک ہے۔کل بھوشن ایک جاسوس ہے اور اس کے ساتھ پاکستانی قانون کے مطابق ہی سلوک کیاجانا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ بھارت مسلسل پاکستان کی سلامتی کے خلاف سرگرم عمل ہے۔بلوچستان سمیت ملک کے دیگر علاقوں میں ایک منصوبہ بندی کے تحت انتشار اور دہشتگردی کی جارہی ہے۔کل بھوشن کی گرفتاری نے ثابت کردیا ہے کہ بھارت پاکستان میں براہ راست دہشت گردی کو سپورٹ کررہا ہے۔افغانستان میں پاکستان کی سرحد کے قریب 12سے زائد بھارتی سفارتخانوں میں دہشتگردوں کو عسکری تربیت اور مالی سپورٹ کرنے کی اطلاعات بھی میڈیا میں آرہی ہیں۔میاں مقصوداحمد نے مزید کہاکہ جنوبی ایشیا میں پائیدار امن کے لیے مسئلہ کشمیر کا فوری حل ازحد ضروری ہے بصورت دیگر خطے میں تیسری عالمی جنگ کے خطرت منڈلاتے رہیں گے۔

Comments are closed.

Our Mission

Jamaat views regarding the three terms ‘Al-Deen’, Divine Order’, and ‘Islamic Way of Life’ as synonyms.

Our mission of ‘Establishment of Deen’ does not mean establishing some part of it, rather establishing it in its entirety, in individual and collective life, and whether it pertains to prayers or fasting, haj or zakat, socio-economic or political issues of the life.

It is incumbent upon a believer to strive for establishing Islam in its entirety without discretion and division, and believer’s real objective is to attain Allah’s pleasure and success in the this world and hereafter, this cannot be realized without trying to establish Allah’s Deen in this world.

Contact Information

Head Office, Jamaat E Islami Punjab
Mansoora, Multan Road Lahore.

Email: info@punjabjamaat.org.pk

Phone: +92 42 35252177, +92 42 35437990-1

Fax: +92 42 35427685




Facebook   |   Twitter   |   Google Plus

Our Location