You are here:    Home      Urdu News      لوٹی ہوئی دولت واپس لاکر عوام کو ریلیف دینے کے دعویدارآہستہ آہستہ بے نقاب ہورہے ہیں

لوٹی ہوئی دولت واپس لاکر عوام کو ریلیف دینے کے دعویدارآہستہ آہستہ بے نقاب ہورہے ہیں

October 10, 2018
Published in Urdu News
Comments are off for this post.

لاہور:امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہاہے کہ امریکی ڈالر134روپے سے تجاوز کرنے سے ملک میں مہنگائی کاگراف مزید بڑھ جائے گااور اس کاپاکستانی معیشت پر برااثر پڑے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں عوامی وفود سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کی نئی حکومت کے صرف ڈیڑھ ماہ میں ہی عوام کاجینا دوبھر ہوگیا ہے۔مہنگائی بڑھنے سے لوگوں کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے۔حکومت کو چاہئے کہ وہ ایسی معاشی پالیسی اپنا ئے کہ جس سے مہنگائی میں کمی ہوسکے اورعام آدمی کوریلیف مل سکے۔انہوں نے کہاکہ دن بدن مہنگائی،بے روزگاری بڑھ رہی ہے اور غریب عوام کو کسی قسم کاکوئی ریلیف میسر نہیں۔عوام کو زندہ درگور کردیا گیا ہے۔صرف چند گھنٹوں میں ہی اسٹاک ایکسچینج میں شدید مندی سے سرمایہ کاروں کے238ارب ڈوب گئے ہیں جبکہ ڈالر کی قیمت میں12روپے سے زائد کااضافہ ملکی تاریخ میں کبھی دیکھنے میں نہیں آیا۔حکمرانوں کے پاس معاشی ایجنڈا ہے اور نہ ہی وژن نام کی کوئی چیز ہے۔انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کی معاشی پالیسیوں سے عوام میں مایوسی پھیل رہی ہے۔تبدیلی کانعرہ لگانے والے بھی اب پریشان دیکھائی دیتے ہیں۔ٹیکس نیٹ بڑھانے اور لوٹی ہوئی دولت واپس لاکرعوام کی زندگی میں آسودگی لانے کے دعویدارناکام دکھائی دے رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ قوم کونئی حکومت سے کئی توقعات وابستہ ہیں۔ماضی کے حکمرانوں نے عوام کومہنگائی،بیروزگاری اور غربت کے علاوہ کچھ نہیں دیا۔اگر تحریک انصاف کی حکومت بھی ان کے نقش قدم پر چلتی رہی تو حقیقی تبدیلی کاخواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہوگا۔انہوں نے کہاکہ ملک میں معاشی بحران سنگین شکل اختیار کرتاجارہا ہے۔وفاقی وزیر خزانہ قومی اسمبلی میں خوشنماتقریرکرکے عوام کودلاسہ تو دیتے ہیں مگر عملاً وہ بھی سابقہ وزرائے خزانہ کی پالیسیوں کو اپنائے ہوئے ہیں۔موجودہ حکومت آئی ایم ایف،ورلڈبنک اور دیگر عالمی مالیاتی اداروں کے سامنے گھٹنے ٹیک رہی ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کو اس وقت معاشی لحاظ سے مضبوط کرنے کی ضرورت ہے۔اس کے لیے ضرورت اس امر کی ہے کہ محض دکھاوے کی بجائے ہنگامی بنیادوں پر ٹھوس منصوبہ بندی کی جائے۔آئی ایم ایف اور ورلڈبنک سے چھٹکارہ حاصل کیاجائے۔ماضی میں بھی عالمی اداروں سے قرض لے کر ملکی معاملات چلائے جاتے رہے جس کانتیجہ یہ نکلاہے کہ آج ہر پاکستانی ایک لاکھ30ہزارکامقروض ہوچکا ہے۔اب اگر تحریک انصاف نے بھی عالمی اداروں سے قرض لینے کے لیے کشکول پکڑلیاتوملکی معیشت مزید تباہی کاشکارہوجائے گی۔

Comments are closed.

Our Mission

Jamaat views regarding the three terms ‘Al-Deen’, Divine Order’, and ‘Islamic Way of Life’ as synonyms.

Our mission of ‘Establishment of Deen’ does not mean establishing some part of it, rather establishing it in its entirety, in individual and collective life, and whether it pertains to prayers or fasting, haj or zakat, socio-economic or political issues of the life.

It is incumbent upon a believer to strive for establishing Islam in its entirety without discretion and division, and believer’s real objective is to attain Allah’s pleasure and success in the this world and hereafter, this cannot be realized without trying to establish Allah’s Deen in this world.

Contact Information

Head Office, Jamaat E Islami Punjab
Mansoora, Multan Road Lahore.

Email: info@punjabjamaat.org.pk

Phone: +92 42 35252177, +92 42 35437990-1

Fax: +92 42 35427685




Facebook   |   Twitter   |   Google Plus

Our Location